سوچا ہوا سوال ہے سمجھا ہوا جواب

4 اگست 2018 ء

سوچا ہوا سوال ہے سمجھا ہوا جواب
پھرتی ہے آنکھ ڈھونڈتی اس حسن کا جواب

کرتے کوئی سوال تو بنتا بھی تھا جواب
اب آپ کی نظر کے تکلم کا کیا جواب

کیا دھڑکنوں نے جانے سوالات کر دیے
چارہ گروں نے سوچے بنا دے دیا جواب

ہمت کہاں کہ دونئِ ہمت کو روئیں ہم
کیونکر بتائیں حوصلہ کیوں دے گیا جواب

اس سے بڑی نہیں کوئی حکمت کتاب میں
ہو راہ کا سوال تو ہے نقشِ پا جواب

تو انتظار کر مرے مرنے تک اے خدا
پہلے فقیہِ شہر کو دے لوں ذرا جواب

راحیلؔ کی غزل ہے غزالاں کی دھن کا فیض
ہر مصرع انتخاب ہے ہر شعر لاجواب

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ کلام اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

خوش آمدید۔ آپ کی یہاں موجودگی کا مطلب ہے کہ آپ کو اردو گاہ کے جملہ قواعد و ضوابط سے اتفاق ہے۔ تشریف آوری کا شکریہ!