یونہی ہنس ہنس کے ترے غم کا سبب میں پوچھوں

اردو شاعری

یونہی ہنس ہنس کے ترے غم کا سبب میں پوچھوں
عشق ہو جائے کسی سے تجھے تب میں پوچھوں

ان سے جو بات نہ ازروئے ادب میں پوچھوں
دل تڑپتا ہے کہ کب اذن ہو کب میں پوچھوں

تو نے سب پوچھ لیا ہو تو کچھ اب میں پوچھوں
مدعا تجھ سے بھی سی کے ترے لب میں پوچھوں

یار لوگوں کی نجابت تو رہی ایک طرف
بس چلے اب تو عدو سے بھی نسب میں پوچھوں

جس طرح آپ کو ہر بات کا آتا ہے جواب
آپ سے اور بھی کچھ آج کی شب میں پوچھوں

میں نے بھی حشر پہ باتیں کچھ اٹھا رکھی تھیں
تو بتائے تو ذرا اے مرے رب میں پوچھوں

دل مرا درد مجھے دین مرا عشق مجھے
کیوں نبھانے کا کسی اور سے ڈھب میں پوچھوں

میں جوابات سے یوں بھی نہیں ہوتا قائل
آپ کچھ بھی نہ کہا کیجیے جب میں پوچھوں

پوچھتا ہے جو شب و روز مرا دل مجھ سے
کاش ان سے کبھی راحیلؔ وہ سب میں پوچھوں

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ کلام اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ