عشق کا حصہ ہیں کھلی آیات

اردو شاعری

عشق کا حصہ ہیں کھلی آیات
وسوسوں تک ہیں عقل کی برکات

بھولتا جا رہا ہوں خود کو میں
کر رہا ہوں تلافئِ ما فات

سوچتے سوچتے خیال آیا
آپ تک سوچ کی کہاں اوقات

ہیں تمھارے فراق کے تحفے
عشق پر ہیں جنون کے اثرات

روز بنتی ہے کائنات نئی
روز اترتی ہیں نت نئی آیات

مسکرا کر شعور والوں پر
دل نے کر دی بڑے پتے کی بات

گئے کس بارگاہ میں راحیلؔ
تم نے خود کو بھی کر دیا خیرات​

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ کلام اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ