تیرے کوچے میں جا کے بھول گئے

اردو شاعری

تیرے کوچے میں جا کے بھول گئے
خود کو ہم یاد آ کے بھول گئے

زخم خنداں ہیں آج بھی میرے
آپ تو مسکرا کے بھول گئے

بحث گو ناصحوں نے اچھی کی
مدعا سٹپٹا کے بھول گئے

جو بھلائے نہ بھولتے تھے ستم
سامنے ان کو پا کے بھول گئے

کون تھے کیا تھے ہم کہاں کے تھے
جانے کس کو بتا کے بھول گئے

ہم تو خیر ان کو بھولتے تھے کہاں
وعدے لیکن وفا کے بھول گئے

ایسے بھی کیا الاؤ بجھتے ہیں
دل کو سمجھا بجھا کے بھول گئے

ہائے آنکھیں تو ہم بھی رکھتے تھے
ہائے ہم تو ملا کے بھول گئے

بھول جاتا ہے آدمی لیکن
آپ نزدیک لا کے بھول گئے

عشق راحیلؔ اسی کو کہتے ہیں
رنج اٹھائے اٹھا کے بھول گئے

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ کلام اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ