بَحْر

اردو عروض

تعریف/مطلب/مفہوم/معنیٰ:

وہ خاص وزن جو عروض کے طے شدہ قواعد کے مطابق مقرر کیا گیا ہو۔

مثلاً بحرِ ہزج مثمن سالم یہ ہے:

مفاعیلن مفاعیلن مفاعیلن مفاعیلن

ہر بحر ایک وزن رکھتی ہے مگر ہر وزن کے لیے اصولی طور پر لازم نہیں کہ وہ کسی بحر میں بھی پایا جائے۔ عملی طور پر البتہ اکثر اوزان کو بحورِ نوزدگانہ میں سے کسی ایک یا زیادہ بحروں سے استخراج کرنا ممکن ہے۔

بحورِ نوزدگانہ وہ مشہور سالم بحریں ہیں جو اردو کو عربی اور فارسی سے ورثے میں ملی ہیں۔ ان پر زحافات کے عمل سے بہت سی مزاحف بحریں بھی حاصل کی گئی ہیں۔

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے عروض فہم۔

یہ عروضی اصطلاح اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

متفرق عروضی اصطلاحات

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ