میری محبت اس کے حوالے جس نے محبت پیدا کی

اردو شاعری

میری محبت اس کے حوالے جس نے محبت پیدا کی
گلیاں کوچے چھان چکا ہوں تاب نہیں ہے صحرا کی

یاد نہیں ہے تیرے بدلنے میرے بدلنے کی باتیں
ایک زمانے میں لگتی تھیں باتیں اور ہی دنیا کی

باز آئے باز آئے میاں ہم تم سے ہمارا میل ہی کیا
سادہ لوح تھے کرنے لگے تھے چالاکوں سے چالاکی

دیکھنے والو دیکھتے رہنا کرنے والے کر بھی گئے
تم نے گو کہ تماشا جانا ہم نے گو کہ تمنا کی

دل کو لہو اب کرتا ہے راحیلؔ کسی کی خاطر کون
ہم نے کیا اور شہر کی خلقت آنکھیں پھاڑ کے دیکھا کی

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ کلام اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ