سب سوال اس خیال سے ٹالے

6 فروری 2018 ء

سب سوال اس خیال سے ٹالے
آدمی نام لے تو کس کا لے

جو تو ہم جانتے ہیں دل کا حال
لُٹ گئے اس کو لوٹنے والے

مسجدیں ہو گئیں حرم یا رب
شیخ خود کو خدا نہ منوا لے

بندگی جس نے کی خدائی کی
کوئی کیا دے جزا کوئی کیا لے

عقل معمول بھی نہیں سمجھی
عشق نے معجزے بھی کر ڈالے

ہم بھی حاضر ہیں دل بھی حاضر ہے
دن قیامت کا آپ ٹھہرا لے

اس کی پلکوں کا اٹھ کے گرنا تھا
ایک تالی سے کھل گئے تالے

درد ہے تو دوا بھی ہے راحیلؔ
چوٹ کھائی ہے زہر بھی کھا لے

راحیلؔ فاروق

پنجاب (پاکستان) سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ کلام اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

خوش آمدید۔ آپ کی یہاں موجودگی کا مطلب ہے کہ آپ کو اردو گاہ کے جملہ قواعد و ضوابط سے اتفاق ہے۔ تشریف آوری کا شکریہ!