بت پرستوں میں خدا مستی ہے

غزل

زار

بت پرستوں میں خدا مستی ہے
درد مہنگا ہے، دعا سستی ہے

شہرِ یاراں میں کوئی عام نہیں
ایک سے ایک بڑی ہستی ہے

جنتِ عشق بھی گھوم آیا ہوں
سربلندوں کے لیے پستی ہے

موت بے وقت نہ آئے گی تو کیوں
روز آنے پہ کمر کستی ہے؟

ہمی راحیلؔ ہوئے خانہ خراب
آج بھی اس کی گلی بستی ہے

راحیلؔ فاروق

زار کے مصنف۔ پنجاب، پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ غزل اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ