ہم گئے ہار، لوگ جیت گئے

غزل

زار

ہم گئے ہار، لوگ جیت گئے
اپنی اپنی نبھا کے ریت گئے

جنگلوں کو نکل گئے پاگل
گئے آپ، اور لے کے پیت گئے

آندھیاں چل پڑیں اندھیروں میں
دیپ بجھنے لگے تو میت گئے

کچھ کمی سی تو رہ گئی لیکن
روز و شب زندگی کے بیت گئے

کیا بیابان، کیا چمن راحیلؔ
من چلے گنگنا کے گیت گئے

راحیلؔ فاروق

زار کے مصنف۔ پنجاب، پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو شاعر۔

یہ غزل اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on pinterest
Share on reddit
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لطفِ سخن کچھ اس سے زیادہ

ہم روایت شکن روایت ساز

پر

خوش آمدید!

باتیں ہماری یاد رہیں گی۔۔۔

تنبیہ