رابطہ

سب سے پہلے تو آپ کی تشریف آوری کا نہایت شکریہ۔

اما بعد یہ بھی حضور کی بندہ پروری ہے جو کسی عنوان ہمیں یاد کرنے کا قصد فرمایا۔ سلامت رہیں تا قیامت رہیں!

رابطے کی صورتیں دو ہیں۔ اول تو یہ ہے کہ سماجی واسطوں از قسم فیس بک، ٹوئٹر وغیرہ پر دید وادید کی راہ نکالی جا سکتی ہے۔ دوم یہ کہ آپ اسی صفحے پر موجود رابطہ خانے کے ذریعے سے اپنا پیغام ارسال فرما سکتے ہیں۔ سرِ تسلیم خم ہے جو مزاجِ یار میں آئے!

ہم جواب دینے میں حتی المقدور تاخیر نہیں کرتے۔ تاہم آپ کی سہولت کے پیشِ نظر یہ عرض کرنا بھی ضروری ہے کہ عموماٰ سماجی واسطوں پر ردِ عمل ای میل کی نسبت جلد موصول ہو جاتا ہے۔

ایک بار پھر آپ کا بہت بہت شکریہ!

راحیلؔ

سماجی واسطے

ڈاک برقی